Chitral Times

22nd August 2017

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

گولین گول 106میگاواٹ ہائیڈوپاور پراجیکٹ کے ٹاورز کو سڑک کنارے سے ہٹایا جائے۔ عوامی حلقے

August 12, 2017 at 10:14 pm

چترال (نمائندہ چترال ٹائمز ) چترال کے مختلف مکاتب فکر نے گولین گول 106میگاواٹ ہائیڈروپاور اسٹیشن سے جوٹی لشٹ تک لائن بچھانے والی کمپنی کی نااہلی پر انتہائی افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ انھوں نے بجلی کے اکثر ٹاورز کو مین روڈ ز کے بالکل ساتھ نصب کردیاہے ۔ جو کسی بھی وقت سڑک کے زد میں انے کے ساتھ حادثات کا بھی سبب بن سکتے ہیں۔ چترال ٹائمز سے گفتگو کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ بجلی کے مذکورہ ٹاورز(کھمبوں ) کو روڈ کے کنارے پیوسط کردیا گیاہے ۔ جبکہ این ایچ اے کے زیر انتظام چند مہینوں کے اندر چترال شندور روڈ کی توسیع پر کام شروع کیا جارہاہے۔ انھوں نے کہا کہ مذکورہ ٹاورز کی تنصیب پر لاکھوں روپے خرچ کئے گئے ہیں۔ جبکہ سڑک کی توسیع کی صورت میں درجن سے زیادہ ٹاورز کو دوبارہ ہٹانا پڑے گا۔ جس پر دوبارہ لاکھوں روپے خرچ کرنے ہونگے۔ انھوں نے کہا کہ حکومت اندھی ہے یا متعلقہ کمپنی ہٹ دھرمی سے کام لے رہی ہے۔ روزانہ کئی افسران کا مذکورہ سڑک سے آنا جانا رہتاہے ۔ مگر کسی نے بھی اس کا نوٹس نہیں لیا۔ عوامی حلقوں نے ضلعی انتظامیہ سے مذکورہ کمپنی کے فارع ہونے سے پہلے ٹاورز کو کسی محفوظ مقامات پر نصب کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ تاکہ قومی خزانے کو نقصان سے بچانے کے ساتھ ٹریفک کوبھی محفوظ بنایا جاسکے۔

Translate »
error: Content is protected !!