Chitral Times

23rd August 2017

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

لاسپور ویلی میں شدید بارش ، شاہداس اور گشٹ نالہ میں سیلاب کی وجہ سے چترال گلگت روڈ بند

August 2, 2017 at 7:08 pm

چترال ( محکم الدین ) بدھ کے روز چترال کے بالائی علاقہ لاسپور ویلی میں شدید بارش ہوئی ۔ جس کے نتیجے میں شاہداس نالہ اور گشٹ گاؤں کے سامنے برساتی نالے میں سیلاب آیا ۔ سیلاب سے چترال گلگت روڈ کو بُری طرح نقصان پہنچا ہے ۔ جبکہ مقامی زمینات اور باغات بھی اس کی زد میں آئے ہیں ۔ ایس ایچ او تھانہ ہرچین قربان علی نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا ۔ کہ سیلاب نے بڑی تباہی مچائی ہے ۔ جس کی وجہ سے چترال گلگت روڈ ہر قسم کی ٹریفک کیلئے بند ہو چکا ہے ۔ مقامی لوگوں اور گلگت جانے والے مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ مشینری استعمال کئے بغیر روڈ کی بحالی میں کئی دن لگ سکتے ہیں ۔ مقامی لوگوں نے مطالبہ کیا ہے ۔ کہ فوری طور پر مشینری کے ذریعے متاثرہ روڈ کی مرمت کی جائے ۔اسی طرح گوژگال میں گلاب، نادر خان ، شیر گلاب،شیر عزیز اورگل نادر کے گھرانوں کو شدید نقصان پہنچنے کے ساتھ کھڑی فصلوں اور گندم کی تیار فصل مکمل طور پر ملبے تلے دب گئے ہیں۔ درین اثنا گذشتہ تین دنوں سے گرمی کی شدت میں غیر معمولی اضافہ ہوا ہے ۔اور چترال کے شمالی پہاڑوں پر موجود گلیشئرز کے پگھلاؤ میں تیزی آئی ہے ۔ گلیشئر ز کے پگھلاؤ میں اضافے کی وجہ سے یارخون کے مر تنگ نالے میں بھی سیلاب آیا ہے ۔ ممبر تحصیل کونسل یارخون میر صاحب بیگ نے میڈیا کو بتایا ۔ کہ سیلاب سے اگرچہ کوئی جانی نقصان نہیں ہوا ۔ تاہم تقریبا چار سو فٹ سڑک ملبے سے بھر جانے اور کٹاؤ کا شکار ہونے کی وجہ سے یارخون بروغل کیلئے آمدورفت بند ہو چکی ہے ۔ بالائی چترال کے ندی نالوں اور دریائے چترال کے بہاؤ میں اضافہ سے دریا کے قریب ترین موجود دیہات کو خطرات کا سامنا ہے ۔ چوئنچ ، بمباغ ، جونالی کوچ ، سارغوز اور زیریں چترال کے مقامات کجو ، ایون ، جنجریت میں زمینات کو زبردست نقصان پہنچا ہے ۔ جبکہ کجو کے مقام پر گھروں کے بہہ جانے کا خطرہ موجود ہے ۔ چترال کے خوبصورت ترین گاؤں ایون کا ہزاروں ایکڑ زمین ایک مرتبہ پھر دریاء کے بہاؤ کی زد میں آیاہے ۔ اور زمینات و فصلوں کو بہت زیادہ نقصان پہنچا ہے ۔ جبکہ گرمی کی شدت میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے ۔ چترال کے تجربہ کار اور بزرگ شہریوں کا کہنا ہے ۔ کہ اگست بھی سیلاب کا مہینہ ہے ۔ اور سابقہ ادوار میں اس مہینے سیلاب آنے کی وجہ سے چترال کو کئی بار نقصان پہنچا ہے ۔ اس لئے لوگوں کو ہر گز غافل نہیں ہونا چا ہیے ۔ چترال میں باران رحمت کیلئے مسلسل دُعائیں مانگی جارہی ہیں ۔ لیکن چترال کے شہراور اطراف کے قریبی علاقے بارش سے تا حال محروم ہیں ۔
دریا ئے چترال میں طغیانی کی وجہ سے چترال ٹاون میں بھی دریا کے نشیبی آبادی کے مکین انتہائی پریشانی سے دوچار ہیں۔ چترال شاہی قلعے کے سامنے دریا کے کنارے آباد گھروں کے اندر پانی داخل ہوگیا ہے۔ جس کی وجہ سے مکین گھر چھوڑ کر محفوظ مقامات کی طرف منتقل ہوگئے ہیں۔

 

Translate »
error: Content is protected !!