Chitral Times

22nd August 2017

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

آغا خان ایجنسی فار ہیبی ٹاٹ کے زیر اہتمام گبور ویلی میں منعقدہ رضا کاروں کیلئے دو روزہ تربیت مکمل

August 1, 2017 at 9:34 pm

چترال(رپورٹ شہریار بیگ)آغا خان ایجنسی فار ہیبی ٹاٹ چترال کے زیر اہتمام گزشتہ روز گبور ویلی میں مرد خواتین رضا کاروں کو قدرتی آفات زلزلہ،سیلاب اور حادثات کے مواقع پر زخمیوں کو فوری طور پرریسکیو کرکے فرسٹ ایڈ دینے کے حوالے سے دو روزہ تربیت مکمل کرنے کے بعد آخری روز اس کا عملی مظاہرہ کیا گیا۔ماسٹر ٹرینرز امیر اللہ اور میڈم نصرت نے ولنٹئرز کو تربیت دی تھی۔اس موقع پر سرچ اور ریسکیو کی ٹیموں نے سیلاب کے دوران دریا کے اُس پار پھنسے ہوئے متاثریں اور زخمیوں کو روپ ریسکیو،دریا میں ڈوبنے والے کو روپ تھرو اور وی شیپ ایووکیشن کے زریعے دریا کو عبور کرکے پھنسے ہوئے متاثریں کو ریسکیو کرکے اُنہیں فوری طور پر طبی امداد (فرسٹ ایڈ) دینے کا عملی مظاہرہ کیا ۔اختتامی تقریب کے موقع پر ریجینل پروگرام منیجر RPMولی محمد خان نے رضا کاروں کو ایمرجنسی کی صورت میں تربیت پر تفصیل سے روشنی ڈالی۔ ایمر جنسی منجمنٹ کے سربراہ امیر محمد خان نے کہا کہ چونکہ گبور ویلی ایک دشوار گزار اور دور افتادہ علاقہ ہے جہان کسی بھی قدرتی آفات کے موقع پر دوسرے علاقوں سے رضاکاروں کی رسائی مشکل ہو جاتی ہے۔جس کی وجہ سے گبور ویلی کے نوجوان مرد خواتین رضا کاروں کو تربیت دینا وقت کا تقاضا تھا۔ایسے مواقع پر چونکہ رضاکاروں کو ایک انسانی جان بچانا اولین ترجیح ہوتا ہے اس لئے تمام ضروری ترکیب پر عمل کرنا پڑتا ہے لا علمی میں انسانی جان خطرہ سے دوچار ہو سکتاہے۔ اُنہوں نے کہا کہ گبور ویلی میں ولنٹئرز کو ضروری سامان اور رابطے کے لئے سٹیلائٹ فون بھی مہیا کیا گیا ہے۔ڈارٹ ممبر ڈاکٹر نور الاسلام نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے ایمرجنسی اور ریسکیو کے سرگرمیوں میں پیش پیش آغا خان ایجنسی فار ہیبی ٹاٹ کے ولنٹئرز کو داد دی۔آغا خان لوکل کونسل پرابیگ کے صدر محمود مراد نے ادارے کا شکریہ کرتے ہوئے کہا کہ ایک انسانی جان کو بچانا پوری انسانیت کو بچانا ہے اور یہی کارخیر آغا خان ایجنسی فار ہیبی ٹاٹ کا ادارہ انجام دے رہا ہے۔

 

Translate »
error: Content is protected !!