Chitral Times

23rd August 2017

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

ماربل سٹی ، اراضی مالکان نے اسمبلی کے سامنے دھرنے کا اعلان کردیا

July 26, 2017 at 2:13 pm

چترال(چترال ٹائمز رپورٹ)چترال ماربل سٹی کے اراضی مالکان نے زمین کی مارکیٹ ریٹ کے مطابق قیمت ادا نہ کرنے کی صورت میں خیبر پختونخوا اسمبلی کے باہر دھرنا دینے کا اعلان کیا ہے۔ میڈیا سے گفت گو میں ماربل سٹی کے اراضی مالکان سابقہ ایم پی بیگم شہزادہ سلیمان، شہزادہ حیدر کمال اور جہانگیر خان کا کہنا تھا کہ سابق وزیراعلیٰ کے دور میں چترال کے علاقہ گنگ میں 320کنال اراضی ماربل سٹی کے لئے حکومت نے حاصل کی تھی۔ اس وقت اراضی کی قیمت 28کروڑ روپے مقرر کی گئی تھی ۔تاہم مالکان کو قیمت ادا کرنے سے پہلے زمین کو خار دار تاریں لگا کر قبضے میں لے لیا گیا۔ اراضی مالکان گذشتہ چار سالوں سے اپنی اراضی کی قیمت ادا کئے جانے کے منتظر ہیں۔ اب ڈپٹی کمشنر نے اراضی مالکان کو بلاکر انہیں چند ہزار روپے دینے کی پیش کش کی ہے۔ جو کھلی غنڈہ گردی کے مترادف ہے۔ متاثرین نے وزیر اعلیٰ پرویز خٹک اور وزیر معدنیات انیسہ زیب سے مطالبہ کیا کہ اراضی مالکان کو طے شدہ قیمت فوری طور پر ادا کی جائے بصورت دیگر وہ وزیراعلیٰ ہاوس اور صوبائی اسمبلی کے باہر دھرنا دیں گے۔ اور خاردار تاریں ہٹاکر اپنی زمینوں پر دوبارہ قبضہ کریں گے۔

Translate »
error: Content is protected !!