Chitral Times

23rd August 2017

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

چترال چیمبر آف کامرس ، ہاشو فاؤنڈیشن اورCCDN مشترکہ بنیادوں پر کام کرنے پر متفق

July 14, 2017 at 11:26 pm

چترال ( نمایندہ چترال ٹائمز ) چترال چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری ، ہاشو فاؤنڈیشن اور چترال کمیونٹی ڈویلپمنٹ نیٹ ورک نے اس بات پر اتفاق کر لیا ہے ۔ کہ وہ چترال میں سیاحت کو فروغ دینے ، آرٹ اینڈ کرافٹ کی ترویج اینڈ مارکٹنگ ، ہوٹلنگ سکلز اور خواتین کی معاشی بہتری کیلئے مشترکہ بنیادوں پر کام کریں گے ۔ اور اس حوالے سے اپنے تجربات ، وسائل یکجا کرکے اہداف کے حصول کیلئے کوششیں کی جائیں گی ۔ اس سلسلے میں ایک غیر معمولی اجلاس آرپی ایم ہاشو فاونڈیشن شہزادہ رضاء الملک کے آفس میں منعقد ہوا جس میں صدر چترال چیمبر آف کامرس و چیرمین سی سی ڈی این سرتاج احمد خان ، ایگزیکٹیو ممبرچترال چیمبر محمد وزیر خان ، منیجر سی سی ڈی این الیاس احمد ، اسسٹنٹ پروگرام منیجر ہاشو نظام ، اسسٹنٹ ایم این ای آفیسر نوروز خان ،اسسٹنٹ پراجیکٹ منیجر موجود تھے ۔ اجلاس میں صدر چیمبر سرتاج احمد خان نے ہاشو فاؤنڈیشن کی طرف سے چترال میں ایجوکیشن ، مختلف ہنر کی تربیت کی فراہمی خصوصا ہنڈی کرافٹ کے فروغ اور خواتین کو معاشی طور پر سہارا دینے کے اقدامات کو سراہا۔ اور کہا ۔ کہ ہاشو فاونڈیشن ہوٹلنگ میں بھی ایک وسیع تجربہ رکھتی ہے ۔ اور چترال جیسے سیاحتی علاقے میں اس شعبے کو ترقی دینے کے سلسلے میں اُن کی خدمات کی اشد ضرورت ہے ۔ جس میں چترال چیمبر آف کامرس ہر ممکن مدد فراہم کرے گا ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ چترال کے لوگوں پر اپنے آپ کو معاشی طور پر زندہ رکھنے کیلئے مشکل وقت آن پڑا ہے ۔ اگر چترال کے نوجوان اور کاروباری طبقے نے آنے والے دو سال مستقبل کی منصوبہ بندی کی بجائے ضائع کئے ۔ تو باہر سے آنے والے لوگ چترال کے تمام کاروبار پر قابض ہوں گے ۔ اور مقامی لوگوں کو شدید معاشی مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا ۔ اس لئے ہمیں وقت کی نزاکت کو بھانپتے ہوئے ہیومن ڈویلپمنٹ پر بھر پور توجہ دینے کی ضرورت ہے ، اور لوگوں کو ہنر اور کاروبار ی تربیت فراہم کرکے معاشی استحکام کی کوششیں کرنی چاہیں ۔ تاکہ مشکل حالات کا مقابلہ کر سکیں ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ چترال چیمبر آف کامرس اور چترال کمیونٹی ڈویلپمنٹ نیٹ ورک آگہی پھیلانے اور سکلز کی فراہمی میں ہاشو فاونڈیشن کے ساتھ بھر پور تعاون کریں گے ۔ آر پی ایم شہزادہ رضاء الملک نے کہا ۔ کہ ہاشو فاؤنڈیشن ایجوکشن ، زراعت ، ماہی پروری ، آرٹ اینڈ کرافٹ ، ہوٹلنگ وغیرہ پر کام کرتا ہے ۔ اور چترال چیمبر و سی سی ڈی این کے ساتھ مل کر کام کرکے اُنہیں خوشی ہوگی ۔ انہوں نے اس بات سے اتفاق کیا ۔ کہ سی پیک اور ایکسپریس وے کی تعمیر سے چترال پر کاروباری یلغار ہو گا ۔ اور مقامی لوگوں کیلئے مقابلہ کرنا ممکن نہیں رہے گا ۔ آئی ٹی آفیسر نظام نے اس موقع پر مزید تفصیلات سے آگاہ کیا ۔ اجلاس میں طے پایا ۔ کہ اس حوالے سے ایم او یو پر دستخط کئے جائیں گے ۔ قبل ازین ایک اور میٹنگ چترال کے ایک مقامی ہوٹل میں صدر چترال چیمبر سرتاج احمد خان کی زیر صدارت منعقد ہوا ۔ جس میں چترال میں بڑھتی ہوئی ماحولیاتی تبدیلی کے سبب سیلاب سے ہونے والے نقصانات پر انتہائی تشویش کا اظہار کیا گیا ۔ اور کہا گیا ، کہ 2015کے سیلاب میں سیاحتی مقام بمبوریت اور رمبور میں ہوٹلوں اور کاروباری مراکز کو شدید نقصان پہنچا ۔ اور یہ لوگ دو بارہ اپنی ہوٹلوں اور دیگر کاروباری اداروں کو بحال کرنے میں ناکام رہے ہیں ۔ جبکہ ممکنہ سیلاب سے مزید نقصانات کے خدشات ہیں ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ اس حوالے سے اُن کی کوششیں کا میابی مراحل میں ہیں۔ اور انشاء اللہ کاروباری متاثرین مطلوبہ قانونی تقاضے پورے کرنے کے بعد مدد حاصل کرنے کے اہل ہو سکیں گے ۔ ا نہوں نے کہا ۔ کہ لوگوں کوآگہی دینے کیلئے کالاش ویلی بمبوریت میں ماحولیات سے متعلق سمینار منعقد کیا جائے گا ۔ جبکہ بمبوریت میں ضلع ، تحصیل اور ویلج کونسل کے جملہ نمایندگان ، ہوٹل ایسوسی ایشن بمبوریت اور بزنس سے وابستہ کالاش خواتین سے میٹنگ کی جائے گی

 

Translate »
error: Content is protected !!