Chitral Times

23rd August 2017

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

چائنہ شنگائی یونیورسٹی میں سالانہ 100طلبہ کو اسکالر شپ فراہم کی جارہی ہے۔یاؤ ژمنگ

July 12, 2017 at 9:52 pm

چائنہ شنگائی یونیورسٹی کے چھ رکنی وفد اور محکمہ اعلیٰ تعلیم کے حکام کا اجلاس، سالانہ 100طلبہ کو اسکالر شپ فراہم کی جارہی ہے۔یاؤ ژمنگ
پشاور ( چترال ٹائمز رپورٹ ) چائنہ شنگائی یونیورسٹی کے چھ رکنی وفد اور محکمہ اعلیٰ تعلیم کے حکام کے درمیان ایک اجلاس بدھ کے روز وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے مشیر برائے اعلیٰ تعلیم مشتاق احمد غنی کی زیر صدارت منعقد ہوا جس میں خیبر پختونخوا کے طالبعلموں کو سکالرشپس کی فراہمی کے مواقع پر تفصیلی بات چیت کی گئی ۔ اجلاس میں شینگائی یونیورسٹی کے ڈین یاؤژمنگ نے واضح کیا کہ شینگائی یونیورسٹی 40سے زائد ممالک کے ساتھ فیکلٹی ایکسچینج اور دیگر پروگرامز میں تعاون کر رہی ہے جبکہ 125ممالک سے تعلق رکھنے والے چار ہزار سے زائد طلبہ سکالر شپ کے ذریعے شینگائی یونیورسٹی میں زیرِ تعلیم ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہر سال پاکستان سے تعلق رکھنے والے 100طلبہ کو مختلف پروگرامز میں سکالر شپس فراہم کی جارہی ہیں ۔ شینگائی یونیورسٹی کے حکام نے واضح کیا کہ محکمہ اعلیٰ تعلیم خیبر پختونخوا کی طر ف سے سکالر شپس پر بھیجے گئے طلبہ کے 25فیصد اخراجات شینگائی یونیورسٹی فراہم کرے گی۔ مشیر اعلیٰ تعلیم مشتاق احمدغنی نے زور دیتے ہوئے کہا کہ سی پیک کے تناظر میں دونوں ممالک کے درمیان اعلیٰ تعلیم کی مد میں مزید تعاون کی ضرورت ہے۔ انہوں نے اپیل کی کہ طلبہ کو دی جانیوالی مالی معاونت کو 25فیصد سے مزید بڑھایا جائے۔ مشتاق غنی نے مزید کہا کہ حال ہی میں محکمہ اعلیٰ تعلیم خیبر پختونخوا نے مختلف چائینز یونیورسٹیوں کے ساتھ روڈشو میں 21مفاہمتی یادداشتوں پر دستخط ہوئے جبکہ اسی سال ستمبر میں 200طلبہ کو چائینز لینگویج کورس کیلئے چائینہ روانہ کر دیا جائے گا۔اجلاس میں دیگر دو طرفہ مفاداتی امور پر بھی تفصیلی بات چیت کی گئی جس میں لی کنگہوانائب صدرشینگائی کلچر ڈویلپمنٹ کارپوریشن ،سو وین پنگ پراجیکٹ لیڈر چائینیز ٹسٹنگ انٹر نیشنل ، فان جین ہوا ڈین انٹرنیشنل ایجوکیشن سانڈرہ یونیورسٹی اور محکمہ اعلیٰ تعلیم کے سیکرٹری سید ظفر علی شاہ اور دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔ اجلا س کے اختتام پر شینگائی یونیورسٹی اور ہائر ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کے مابین مزید تعاو ن کے مفاہمتی یادداشت پر دستخط کئے گئے۔

Translate »
error: Content is protected !!