Chitral Times

22nd August 2017

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

گزشتہ دور حکو مت کے نو کروڑ 60لا کھ 14ہزار نو سورو پے کے بے قا عدگیو ں اور خردبرد کا نو ٹس

July 10, 2017 at 11:26 pm

پشاور ( چترال ٹائمز رپورٹ ) خیبر پختو نخوا اسمبلی کی پبلک اکا ؤنٹس کمیٹی نے گزشتہ دور حکو مت میں صو با ئی محکمہ انتظا میہ کی جا نب سے کئے گئے نو کروڑ 60لا کھ 14ہزار نو سو(96014900)رو پے کے اخرا جا ت میں مبینہ بے قا عدگیو ں اور خردبرد کا سختی سے نو ٹس لیتے ہو ئے اس رقم کی ریکو ری یا قا نو نی ضوا بط پو رے کر نے اور مستقبل میں ان بے قا عدگیو ں سے بچنے کے لئے مر وجہ قوا نین پر سختی سے عمل درا آمد اور ان قوا نین و ضوا بط کو مزیدمو ئثر بنا نے کے لئے اقدا ما ت کا حکم دیاہے ۔یہ حکم محکمہ انتظا میہ کو پبلک اکا ؤ نٹس کمیٹی کے اجلاس کے دورا ن دیا گیاجو پیر کے روزخیبر پختو نخوا ہا ؤ س ایبٹ آباد میں صو با ئی اسمبلی کی ڈپٹی سپیکرڈا کٹر مہر تا ج رو غا نی کی صدا رت میں منعقد کیا گیا۔اجلاس میں کمیٹی کے ار کا ن و ارا کین صو با ئی اسمبلی محمو د جا ن خا ن ،سید محمد علی شا ہ با چا،قر با ن علی خا ن ،محمد ادریس خان کے علا وہ سیکر یٹری ایڈمنسٹر یشن علی حسن یو سف زئی،سیکر یٹری اسمبلی اما ن اللہ خا ن،ایڈیشنل سیکر یٹری اسمبلی امجد علی خا ن اورآڈٹ،خزانہ و قا نو ن کے محکموں کے متعلقہ افسران نے بھی شر کت کی ۔کمیٹی کا اجلاس آئندہ تین اگست تک جا ری رہے گاجس میں ما لی سا ل 2013-14کی آڈٹ رپو رٹ کے مطا بق 15صو با ئی محکمو ں کے اخرا جا ت میں با قاعدگیو ں اور خرد برد کے ضمن میں آڈٹ اعترا ضا ت کا جا ئزہ لے کر خرد برد کی گئی رقوم کی قو می خزا نے میں وا پسی کے لئے اقدا ما ت کئے جا ئیں گے۔اجلاس کے دورا ن ما لی سا ل2013-14کی آڈٹ رپو رٹ کے مطا بق گزشتہ دور حکو مت میں محکمہ انتظا میہ کی جا نب سے کئے گئے نو کروڑ 60لا کھ رو پے کے اخرا جا ت پر تیرہ آڈٹ اعترا ضا ت پر تفصیلی غور کیا گیا اور کمیٹی کی چےئر پر سن نے دستا ویزی حقا ئق و ما لی قوا عد و ضوا بط کی رو شنی میں ان اخرا جا ت میں سے بعض اخرا جا ت کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئے ان کی دو ما ہ کے اندر ریکو ری کا حکم دیا۔یہ اعترا ضا ت خیبر پختو نخوا ہا ؤ سسز و دیگر سر کا ری ریسٹ ہا ؤ سوں کے کمرو ں کے کرا ئے کی رقو م ،سر کا ری گا ڑیو ں کے تیل و صوا بدیدی گرا نٹ کی خرد برد ،سر کا ری ریسٹ ہا ؤسسز وغیرہ میں غیر قا نو نی رہا ئش ،رہا ئش کے لئے فرا ہم کئے گئے پر مٹ اور دیگر دستا ویزات کی عدم مو جو دگی، ایک سے زیادہ بنگلے رکھنے وا لے اعلی سر کا ری افسرا ن سے کرا یو ں کی عدم وصو لی ،آفیسر میس کی ممبر شب فیس کی عد م وصو لی ،سا بق وزیر اعلی کے پی ایس او کی شا ہی مہما ن خا نہ میں مفت رہا ئش ،سر کا ری ہیلی کا پٹر کی اوپن ٹنڈر کے بغیر مر مت اور ہیلی کا پٹر پر اٹھنے وا لے اخرا جا ت میں بے قا عدگیو ں کی بنا ء پرعا ئد کئے گئے تھے۔کمیٹی کی چےئر پر سن ڈا کٹر مہر تا ج رو غا نی نے اجلاس سے اپنے خطا ب میں وضا حت کر تے ہو ئے کہا کہ پی اے سی میں سر کا ری محکمو ں اور ادا رو ں کے ما لی امور میں قا نو نی بے ضا بطگیو ں ،بے قا عدگیو ں اور کو تاہیو ں کا جا ئزہ لیا جا تا ہے جس کا وا حد مقصد یہ ہے کہ مستقبل میں اس روش سے نہ صر ف اجتنا ب کیا جا ئے بلکہ محکمو ں اور ادا رو ں کے انٹر نل آڈٹ کو بھی مو ئثر بنا یا جا ئے تا کہ پی اے سی کے آڈٹ کی ضرو رت ہی پیش نہ آئے ۔انہو ں نے کہا کہ مو جو دہ حکو مت نے چو نکہ کر پشن کے تدا رک کے لئے اہم اقدا ما ت کئے ہیں اس لئے بھی پی اے سی کا کردار اہم ہے ۔ ڈا کٹر مہر تا ج رو غا نی نے کہا کہ کے پی ہا ؤ سسز وغیرہ کے کمرو ں کے کرا یو ں کی مد میں 25لا کھ55ہزار کی خرد برد کے خلا ف لگا ئے گئے آڈت پیرا پر اجلاس میں بحث کے بعد محکمہ انتظا میہ کو ہدا یت کی کہ وہ گزشتہ دور میں خرد برد کی گئی رقم کے ذمہ دارا ن افراد سے وصو لی کے علا وہ مو جودہ دور کے گزشتہ دو سا لو ں کا انٹر نل آڈٹ بھی کر ے ۔انہو ں نے پی اے سی کے ار کا ن محمود جان خا ن،قر با ن علی خا ن اور سید محمد علی شا ہ پر مشتمل کمیٹی بھی تشکیل دی جو ریکا رڈ کی چھا ن بین کر کے ان سر کا ری افسرا ن کی نشا ندھی کر ے گی جو سر کا ری کمرو ں میں مفت رہا ئش کے با و جود سفری الا ؤ نس بھی وصو ل کر تے رہے ۔محکمہ انٹی کر پشن کی گا ڑیو ں کے ایندھن کی خریداری کی مد میں 10لا کھ90ہزار کے غبن سے متعلق آڈٹ اعترا ض پر کمیٹی کی سر برا ہ نے متعلقہ محکمے کا جوا ب تسلیم کر لیا ا تا ہم انہو ں نے محکمے کو ہدا یت کی کہ وہ دو روز کے اندر مکمل چھا ن بین کر کے محکمہ انٹی کر پشن کے جواب کے صحیح یا غلط ہو نے کا تعین کر ے ۔انہو ں نے محکمہ انٹی کر پشن کو بھی حکم دیا کہ وہ مستقبل میں ما لی امور کو شفا ف رکھنے کی غرض سے آڈٹ کمیٹی کا اجلاس یقینی بنا ئے ۔گزشتہ دور حکو مت کے ما لی سا ل 2013-14میں صو با ئی وزراء کو جا ری کی گئی 64لا کھ 50ہزار رو پے کی صوابدیدی گرا نٹ کے استعما ل کے ریکا رڈ کی عد م مو جو دگی کے با عث عا ئد کیا گیا آڈٹ اعترا ض کمیٹی نے طو یل بحث کے بعد مسترد کر دیا تا ہم کمیٹی چےئر پر سن نے محکمہ آڈٹ کا شکریہ اداکر تے ہو ئے کہا کہ اس نے مو جودہ حکو مت کو اس با رے میں ہو شیا ر کر دیا ۔انہو ں نے کہا کہ عدا لت نے بھی چو نکہ صو ابدیدی فنڈ کے آڈٹ کا حکم دیا ہے اس لئے ہمیں اس فنڈ کے استعما ل میں ضا بطے کی تما م کا ر وا ئیاں پو ری کر کے اس کا با قا عدہ ریکا رڈ مر تب کر نا ہو گا۔کے پی ہا ؤ س اسلا م آباد کے سا ت کمرو ں میں غیر قا نو نی رہا ئش کی بنا پر سر کا ری خزا نے کو ہو نے وا لے 51لا کھ رو پے کے نقصا ن کا معا ملہ ڈپٹی سپیکر نے چھا ن بین کے لئے سب کمیٹی کے سپرد کر دیا۔ایک سے زا ئد سر کا ری بنگلے رکھنے وا لے اعلیٰ سر کا ری افسرا ن کے ذمے وا جب الادا ایک کروڑ ایک لا کھ 93ہزار رو پے کی رقم کی وصو لی کے با رے میں کمیٹی نے فیصلہ کیا کہ اس رقم کی وصو لی کے لئے متعلقہ افسرا ن کو نو ٹس دئے جا ئیں اور عدم ادائیگی کی صو رت میںیہ رقم ان افسرا ن کی تنخوا ہو ں یا پنشن سے کا ٹی جا ئے ۔شا ہی مہما ن خا نہ میں2008سے2013تک رہا ئش پذیر رہنے وا لے سا بق و زیر اعلیٰ کے پی ایس او کے ذمہ 24لا کھ 78ہزار رو پے کی کرا ئے کی رقم کی وصو لی کے با رے میں ڈا کٹر مہر تا ج رو غا نی نے کمیٹی کے ارکا ن اور محکمہ قا نو ن کی مشا ورت سے محکمہ انتظا میہ کو ہدا یت کی کہ وہ اس رقم کی وصو لی کے لئے اقدا ما ت فوری شرو ع کر یں اور دو ما ہ کے اندر وصو لی یقینی بنا ئیں ۔ما لی سا ل2012-13میں سر کا ری ہیلی کا پٹر کی مر مت اور استعما ل پر اٹھنے وا لے سا ڑھے پا نچ کروڑ رو پے سے زا ئد کے اخرا جا ت سے متعلق کمیٹی کو بتا یا گیا کہ اس با رے میں آڈٹ اعترا ضا ت پہلے ہی دور کر دئیے گئے ہیں ۔تا ہم سیکر یٹری انتظا میہ نے ہیلی کا پٹر استعما ل کے بارے میں مو جودہ حکو مت کی پا لیسی کی وضا حت کر تے ہو ئے بتا یا کہ مو جودہ حکو مت میں حکو متی شخصیا ت کے لئے وی وی آئی پی اور وی آئی پی کی حیثیت ختم کر دی گئی ہے اور سر کا ری ہیلی کا پٹر صر ف اور صر ف سر کا ری مقا صد یا کسی ایمر جنسی میں ہی استعما ل کیاجا سکتا ہے۔

Translate »
error: Content is protected !!