Chitral Times

23rd August 2017

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

ضلعی انتظامیہ نے شاہی مسجد چترال سے منسلک پلازہ کی تعمیر روکوادی

June 24, 2017 at 4:05 am

چترال( نمائندہ چترال ٹائمز ) ڈائریکٹوریٹ آف آرکیالوجی اینڈ میوزیم حکومت خیبر پختونخوا کی تشویش پر ضلعی انتظامیہ چترال نے شاہی مسجد چترال کے ساتھ پلازہ کی تعمیر کو فوری طور پر روک دیا ہے ۔ ڈائریکٹوریٹ آف آرکیالوجی اینڈ میوزیم کی طرف سے ڈپٹی کمشنر چترال کو لکھے گئے ایک مراسلہ میں کہا گیاہے ۔ کہ شاہی مسجد چترال ایک قومی اثاثہ ہونے کے ساتھ چترال کی پہنچان بھی ہے ۔ جبکہ خیبر پختونخوا ایکٹ 2016کے سیکشن 55کے تحت کسی بھی قومی اثاثہ کے نزدیک دو سوفٹ تک تعمیرات پر مکمل پابندی ہے۔ لہذا مذکورہ پلازہ کی تعمیر کو فوری طور پر روک دیا جائے۔ جس پر کاروائی کرتے ہوئے اسسٹنٹ کمشنر چترال نے تعمیراتی کام فوری طور پر بندکرادیاہے ۔ اس سلسلے میں رابطہ کرنے پر اسسٹنٹ کمشنر عبد الاکرم نے چترال ٹائمز کو بتایا کہ ڈپٹی کمشنر کی ہدایت کے مطابق تعمیراتی کام بند کردیا گیا ہے ۔ اور زمین مالکان کو کل آفس بلوایا گیا۔ تاکہ معلومات لینے کے بعد مذید کاروائی عمل میں لایا جاسکے ۔ یادرہے کہ مذکورہ زمین میں شاہی خاندان کے پرانے دکانات و گیراج تھے گزشتہ سال مہتر چترال نے مذکورہ زمین ایک غیر مقامی شخص کو فروخت کر دیا تھا۔ جو اس پر اب پلازہ تعمیر کرنا چاہتا ہے۔ جس پر ارکیالوجی اینڈ میوزم ڈیپاراٹمنٹ نے اپنے خدشات کا اظہار کرتے ہوئے پلازہ کی تعمیر فوری طور پر روکنے کیلئے مراسلہ بھیجا ہے۔

Translate »
error: Content is protected !!