Chitral Times

22nd August 2017

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

پبلک ہیلتھ، انجینئر نگ ڈویژن چترال کے تعمیراتی کاموں میں ناقص میٹریل کے استعمال کا انکشاف، ڈسٹرکٹ مانیٹرنگ آفیسر کا از سر نو تعمیر اور متعلقہ محکمہ و ٹھیکہ دار کے خلاف کاروائی کی سفارش

June 6, 2017 at 8:50 pm

چترال ( چترال ٹائمز رپورٹ )چترال کی ترقیاتی منصوبوں میں متعلقہ حکام کی عدم دلچسپی کی وجہ سے ٹھیکہ داروں کو کھلی چھوٹ مل گئی ہے۔ پبلک ہیلتھ، انجینئر نگ ڈویژن چترال کی لاپرواہی کی وجہ سے ٹھیکہ دار نے استنگول کے مقام پر پانی کی ٹینکی اور گولین کے مقام پر سورس چمبر کی تعمیر میں غیر معیاری اور ناقص میٹئریل کا ا ستعمال کیا جو کے عوام اور حکومت کا پیسہ ہڑپ کرنے کے مترادف ہے۔ ڈسٹرکٹ مانیٹرنگ افیسر، ڈائریکٹوریٹ اف مانیٹرنگ اینڈ ایوالویشن ،پلانگ اینڈ ڈویلپمنٹ ڈیپارٹمنٹ نے معائنہ کے بعد اپنے سفارشات افسران بالا کو بجھوادی ہے۔جس میں استنگول میں پانی کی ٹینکی اور گولین میں سورس چمبر کی از سر نو تعمیر، متعلقہ محکمہ کے XEN،SDO,اور سب انجینئرز کے خلاف سخت محکمانہ کاروائی اور مذکورہ ٹھیکہ دار کو بلیک لسٹ کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ واٹر سپلائی سکیم مداک میں ٹھیکہ دار کو کام سے پہلے پائپ کی مد میں بھاری رقم کی پیشگی ادائیگی کی گئی ہے مگر کام کا کوئی خاص نام و نشان نہیں ہے۔

Translate »
error: Content is protected !!