Chitral Times

22nd August 2017

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

شہزادہ خو ش احمد الملک سپر د خاک،

June 3, 2017 at 7:14 pm

چترال (نمائندہ چترال ٹائمز) سابق ریاست چترال کے حکمران ہزہائی نس سر شجاع الملک کا بیٹا شہزادہ خوش احمد الملک گزشتہ رات ایون میں واقع اپنے محل میں مختصر علالت کے بعد وفات پاگئے جنہیں ہفتے کے روز ایون میں سپرد خاک کردیا گیا۔ وہ 1896سے 1936ء تک ریاست چترال کے حکمران کے پندرہ بیٹوں میں سے آخری شہزادہ تھا جوکہ 1920ء میں پیدا ہوا تھا ۔ انڈیا کے ریاست ڈیراڈون میں ابتدائی تعلیم کے بعد انہوں نے برٹش آرمی میں کمیشن حاصل کیا جبکہ 1960ء کے عشرے میں پاک آرمی سے میجر کے عہدے سے ریٹائر ہوگئے ۔ انہوں نے ریٹائرمنٹ کے بعد بھی بھر پور زندگی گزاری اور 1970ء کے الیکشن میں قومی اسمبلی کی نشست پر الیکشن لڑا مگر کامیاب نہ ہوسکے ۔ وہ افغان مہاجرین کا ڈسٹرکٹ ایڈ منسٹریٹر بھی رہے اور افغانستان کا کئی مرتبہ سفر کیا۔ شہزادہ خوش احمد الملک شاعر بھی تھے جس نے معاشرتی اور ماحولیاتی موضوعات پر طبع ازمائی کی اور گلائیوجواب گلائی کے نام سے مجموعہ اشعار بھی شائع کئے۔ وہ سرحد رورل سپورٹ پروگرام کے چیف ایگزیکٹو افیسر شہزادہ مسعود الملک اور شہزادہ مقصود الملک کا والد، سابق رکن قومی اسمبلی شہزادہ محی الدین کا چچا، معروف پولو کھلاڑی شہزادہ سکندر الملک اور کیپٹن سراج الملک کے بھی چچا تھے ۔ ان کے نماز جنازے میں ضلع بھر سے کثیر تعداد میں لوگوں نے شرکت کی۔

Translate »
error: Content is protected !!