Chitral Times

17th August 2017

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

خیبر پختونخوا میں پنجاب اور سندھ کے مقابلے میں کرپشن اور اقربا پروری کم ترین سطح پر ہے۔شاہ صاحب

May 26, 2017 at 9:47 pm

پشاور ( چترال ٹائمز رپورٹ ) کمشنررائٹ ٹو پبلک سروس کمیشن شاہ صاحب نے دعویٰ کیا ہے کہ دیگر صوبوں کی نسبت خیبر پختونخوا میں صوبائی حکومت کے اصلاحاتی اقدامات کے باعث اچھی طرز حکمرانی میں بہتری آئی ہے ۔انہوں نے مزید بتایا کہ اس سلسلے میں ایک عالمی ادارے کے اعلان کے مطابق خیبر پختونخوا میں پنجاب اور سندھ کے مقابلے میں کرپشن اور اقربا پروری کم ترین سطح پر ہے۔وہ عالمی بنک اور حکومت خیبر پختونخوا کے محکمہ منصوبہ سازی و ترقی کے ایک مشترکہ پراجیکٹ ’’گورننس اینڈ پالیسی پراجیکٹ‘‘ کے تحت جمعہ کے روز ہزارہ یونیورسٹی اور ڈسٹرکٹ بار مانسہرہ میں منعقدہ عوامی شعور اور آگاہی سے متعلق مختلف تقاریب سے خطاب کر رہے تھے۔وائس چانسلر ہزارہ یونیورسٹی پروفیسر محمد ادریس اور مانسہرہ ڈسٹرکٹ بار کے صدر نے بھی اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کیا جبکہ گورننس سپیشلسٹ جی پی پی اشرف خان اور کمیونیکیشن سپشلسٹ محمد عاطف نے بھی ان نئی قانون سازیوں کے بارے میں سامعین کو بنیادی نوعیت کی معلومات سے آگاہ کیا۔رائٹ ٹو پبلک سروس کمیشن کے کمشنر شاہ صاحب نے مزید بتایا کہ اچھی طرز حکمرانی ،قانون کی حکمرانی،شفاف نظام اور مشترکہ فیصلہ سازی سے آتی ہے جو آر ٹی پی ایس اور آر ٹی آئی ایکٹ کے اہم مقاصد میں شامل ہیں۔انہوں نے سامعین کو مزید آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ مستقبل قریب میں 35مزید خدمات کا اعلان کیا جائے گا جو اس نظام کو شہریوں کے لئے مزید موثر بنا دے گا اور خدمات فراہم کرنے والوں کو اس امر کا پابند بنائے گا کہ وہ عام لوگوں کو مقررہ وقت میں خدمات فراہم کریں۔اس موقع پر ہزارہ یونیورسٹی مانسہرہ کے 60طلباء نے گورننس رضا کار گروپ میں اپنے آپ کو بحیثیت رکن رجسٹرڈ کرایا۔نوجوانوں کا یہ گروپ خیبر پختونخوا میں عوامی شکایات و مشکلات کے ازالے سے متعلق نظام کے بارے میں عوامی آگاہی و شعور کی بیداری کے لئے جی پی پی کی معاونت کرے گا۔یہ جی پی پی انیشیٹیو دیگر یونیورسٹیوں میں بھی جی وی جی کی تشکیل کرے گا۔

Translate »
error: Content is protected !!