Chitral Times

17th August 2017

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

کٹ گاڑیوں کے نام پر لوگوں کو بے جا تنگ نہ کیا جائے۔ مولانا چترالی

May 21, 2017 at 7:09 pm

پشاور ( چترال ٹائمز رپورٹ ) کٹ گاڑیوں کے نام پر ضلع چترال میں نان کسٹم پیڈ گاڑیوں کے خلاف کاروائی اپنی غلطی چھپانے کیلئے کی جارہی ہے کیا جہاں کٹ گاڑیا ں بنائی جاتی ہیں وہ پاکستانی حدود سے باہر ہے؟کیا کٹ گاڑیوں کے بنانے اور فروخت کرنے والوں کیخلاف کوئی کاروائی ہوئی ہے؟ جبکہ زمین فروخت کر کے اپنے بچوں کو پالنے کیلئے ایک گاڑ ی رکھنے والوں کو بیجا اور ناجائز تنگ کیا جاتاہے۔تمام گاڑیوں کی باقاعدہ رجسٹریشن ہو نی چا ہئے تاکہ غریب لوگ اپنے بال بچوں کیلئے حلال کی روزی کما سکیں ان خیالات کا اظہار جماعت اسلامی پاکستان کی مرکزی مجلس شوریٰ کے رکن اور سابق MNA مولانا عبد الاکبر چترالی نے چترال انتظامیہ کی جانب سے نان کسٹم پیڈگاڑیوں کے خلاف کریک ڈاؤن پر اپنے رد عمل میں کیا ہے انہوں نے صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا کہ پکڑی گئی تمام گاڑیاں ان کے مالکان کے حوالہ کی جائیں اور اصل مجرموں کو پکڑ کر آئندہ کیلئے کٹ گاڑیوں کا راستہ روکا جائے۔انہوں نے مزید کہا کہ حکومت کا کا م جرم کی جڑیں کاٹنا ہے نہ کہ شاخ تراشی کرنا عوام اس لئے اور قطعی بے قصور ہیں کہ انہیں معلوم ہی نہیں کہ کٹ گاڑی کی پہچان کیسے کی جاسکتی ہے؟

Translate »
error: Content is protected !!