Chitral Times

22nd August 2017

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال بونی میں فوری لیڈی ڈاکٹر تعینات کی جائے بصورت دیگر خواتین سڑکوں پر نکل ائیں گے۔

May 18, 2017 at 9:52 pm

بونی ( جمشید احمد)آل ناظمین فوروم کا اپر چترال کا ایک ہنگامی اجلاس بونی میں منعقد ہوا جس میں صدر ناظمیں ال فوروم پرویز لال ،سرپرست اعلی وور محمد ،جائیٹ سکرٹری مر سلین ،صدر غلام سرور اور ممبر ضلع کونسل خواتین ونگ حصول بیگم نے شرکت کی اجلاس میں تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال بونی کا ذکر کر تے ہوئے کہا گیا کہ یہ تین تحصیلوں پر مشتمل واحد ہسپتال ہے جہاں سب ڈویثرن مستوج کے دور دراز علاقوں سے سیکڑوں افراد علاج معالجے کے لیے آتے ہیں ہسپتال میں کئی سالوں سے ڈاکٹروں کی کئی اسامیاں خالی ہیں جس کی وجہ سے مریضوں کو کافی مشکلات کا سامنا ہے خاص کر لیڈی ڈاکٹر نہ ہونے کی وجہ سے خواتین انتہائی پریشان ہیں ایک معمولی زنانہ کیس کی بنا پر کئی کلو میٹر دور چترال جانا پڑتا ہے اور خواتیں اپنے مختلف قسم کے زنانہ امراض بھی اکثر مرد ڈاکٹروں سے اسانی سے ڈیل نہیں کر سکتے ہیں ان کے لیے الگ لیڈی ڈاکٹر ہونا انتہائی ضروری ہے اس سے پہلے لیڈی ڈاکٹرزرینہ اغظم کام انجام دی رہی تھی ان کے تبالے کے بعد کئی عرصوں سے کوئی ڈاکٹر موجود نہیں ہے جس کی وجہ سے مریضوں کو کافی مشکلات کا سامنا ہے انہوں نے ڈی ایچ اوچترال اور صوبائی سے حکومت سے داد رسی کی اپیل کرتے ہیں کہ عوام کی مشکلات کو مد نظر رکھتے ہوئے یہاں لیڈی ڈاکٹر کا بندوبست کی جائے یا ڈاکٹرزرینہ کو واپس ہسپتال لائی جائے اور عوام کو صحت کی بہترسہولت میسرکی جائے ممبر ضلع کونسل حصول بیگم نے کہا بصورت دیگر خواتین سمت سڑکوں پر نکل ائیں گے جسکی تمام ذمہ داری محکمہ صحت اور صوبائی حکومت پر عائید ہوگی ۔

Translate »
error: Content is protected !!