Chitral Times

21st August 2017

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

گلگت بلتستان کو گندم سبسڈی کے نام پر ملنے والی رقوم نے عوام کو کاہل بنا دیا،ولایت بلتی

May 16, 2017 at 10:15 pm

اسلام آباد (چترال ٹائمز رپورٹ) گلگت بلتستان کو گندم کی سبسڈی کے نام پر ملنے والی رقوم نے عوام کو کاہل بنا دیا۔ سالانہ 6 ارب 4 کروڑ روپے کے گندم سبسڈی سے عوام کو کسی قسم کا فائدہ نہیں ہے۔ سالانہ 6 ارب 4 کروڑ روپے کا بجٹ تعلیم اور ترقیاتی منصوبوں پر صَرف کیا جاتا تو عوام خوشحال ہو جاتی ۔ گندم سبسڈی کی وجہ سے عوام نے کاشتکاری چھوڑ دی ہے جس کے باعث زمینیں بنجر بنتی جا رہی ہیں۔ وفاقی وزیر خزانہ گندم سبسڈی والا بجٹ تعلیم اور ترقیاتی منصوبوں پر خرچ کریں۔ ان خیالات کا اظہار گلگت بلتستان ہیومن رائٹس آرگنائزیشن(رجسٹرڈ) کے چیئرمین ولایت بلتی نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کے عوام محنتی، جفاکش اور غیور ہیں، گندم سبسڈی کی وجہ سے عوام نے اپنے کھیتوں میں کام کرنا چھوڑ دیا، گندم سبسڈی کی مد میں ملنے والی رقوم اگر صحیح طرح استعمال ہو تو گلگت بلتستان کے ہر گھر میں گندم مفت فراہم کی جا سکتی ہے جبکہ گندم سبسڈی کے دو حصے بھی عوام پر خرچ نہیں ہوتے۔ ماضی میں گندم سبسڈی میں کرپشن کے کئی ریکارڈز موجود ہیں۔ چیئرمین گلگت بلتستان ہیومن رائٹس آرگنائزیشن(رجسٹرڈ) ولایت بلتی نے وزیراعظم پاکستان اور وزیر خزانہ سے درخواست کی ہے کہ گندم سبسڈی کی بجائے قوم کو تعلیم و صحت کی ضروریات فراہم کی جائیں۔

Translate »
error: Content is protected !!