Chitral Times

17th August 2017

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

تین روز ہ ڈیجیٹل یوتھ سمٹ اختتام پذیر ، چار ہزار سے زائد افراد نے شرکت کیں

May 9, 2017 at 7:12 am

پشاور( چترال ٹائمز رپورٹ ) ڈیجیٹل یوتھ سمٹ کے نام تین روزہ بین الاقوامی آٹی ٹی کانفرنس اتوار کے روز پشاور میں اختتام پذیر ہوا جس کا انعقاد خیبرپختونخوا انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ نے ورلڈ بینک اور دیگر شراکت دار اداروں کے تعاون سے کیا تھا ۔ سمٹ میں چار ہزار سے زائد افراد نے شرکت کی جن میں انفارمیشن اینڈ کمیونیکیشن ٹیکنالوجی کے شعبے کے طلباء ، ماہرین ، سرمایہ کار ، اساتذہ ، بین الاقوامی آئی ٹی کمپنیوں کے نمائندے ، غیر ملکی مندوبین اور سرکاری حکام شامل تھے ۔اس سمٹ کے انعقاد کا مقصد صوبے کے نوجوانوں کی تخلیقی صلاحیتوں کو قومی اور بین الاقوامی سطح پر اجاگر کرکے انہیں کامیاب بزنس ماڈل کی شکل دینے کے لئے ایک موثر پلیٹ فارم فراہم کرنا تھا جہا ں پر صوبے کے نوجوان اور خصوصاً انفارمیشن ٹیکنالوجی کے شعبے سے وابستہ طلباء اپنے ہی صوبے میں دنیا بھر کے مشہور اور معروف آٹی ٹی کمپنیوں کے نمائندوں ، ماہرین ، سرمایہ کاروں اور مندوبین کے پیشہ ورانہ تجربات سے بھر پور استفادہ حاصل کیا ۔

یاد رہے کہ ڈیجیٹل یوتھ سمٹ گزشتہ چارسالوں سے منعقد کیا جار ہا ہے جو صوبے کے نوجوانوں کو روزگار کے زیادہ سے زیادہ مواقع فراہم کرکے انہیں خود مختار بنانے اور صوبے کی معیشت کو ڈیجیٹل اکانومی کیطرف لے جانے کے لئے صوبائی حکومت کی کوششوں کا حصہ ہے ۔ڈیجیٹل یوتھ سمٹ 2017کے دوران صوبے کی پہلی ڈیجیٹل سٹریٹجی کا اجراء کیا گیا جس کا مقصد صوبے کے نوجوانوں کو انفارمیشن ٹیکنالوجی کے جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے ، انہیں جدید مہارت فراہم کرنے اور قومی و بین الاقوامی جابز مارکیٹ تک ان کی رسائی کو اسان بنانے کے لئے روڈ میپ فراہم کرنا ہے ۔ سمٹ کے دوران صوبے میں سائبر کرائمز کی روک تھام اور اس کے خلاف موثر اور بروقت اقدامات کو ممکن بنانے کے لئے سائبر ایمرجنسی رسپانس سنٹر کا بھی قیام عمل میں لایا گیا ۔ اسی طرح سمٹ میں حاصل ہونے والی کامیابیوں میں خیبر پختونخوا آٹی ٹی بورڈ اور جاز موبائل کمپٹی کے درمیان مفاہمت کی یاداشت پر دستخط بھی ہے جس کے تحت دونوں ادارے صوبے میں انفارمیشن ٹیکنالوجی اور ڈیجیٹل ڈویلپمنٹ کے سلسلے میں مشترکہ کاوشیں کریں گے تاکہ صوبے کے نوجوانوں کو زیادہ سے زیادہ روزگار کے مواقع فراہم کئے جا سکیں اور صوبے کی معیشت کو ایک نئی بنیادیں فراہم کئے جا سکیں ۔

سمٹ میں سامنے آنے والی باتوں میں اہم بات یہ بھی ہے کہ اس سمٹ کے انعقاد سے آنے والے دنوں میں صوبے میں چار ہزار سے زائد آن لائن ملازمتوں کے مواقع پیدا ہوں گے ۔ ڈیجیٹل یوتھ سمٹ 2017ء میں وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک کے علاوہ پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے بھی شرکت کی ۔ سمٹ کے شرکاء سے اپنے خطاب میں عمران خان نے اس بین الاقوامی معیار کے سمٹ کے انعقاد پر صوبائی حکومت خصوصاً کے پی آئی ٹی بورڈ کے حکام کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ نوجوان ہماری قوم کا اثاثہ ہیں جو انفارمیشن ٹیکنالوجی کے موثر استعمال کے ذریعے ملک کی ترقی میں سب سے زیادہ اہم کردار ادا کر سکتے ہیں او رپاکستان تحریک انصاف کی موجودہ صوبائی حکومت صوبے کے نوجوانوں کو بااختیار بنانے کے لئے ہر ممکن اقدامات اٹھائے گی ۔ ڈیجیٹل یوتھ سمٹ کے اختتامی تقریب سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے سینئر وزیر برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی شہرام ترکئی نے اس سمٹ کے کامیاب انعقاد کے سلسلے میں کے پی آئی ٹی بورڈ اور ورلڈ بینک کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ اگلے سال ڈیجیٹل یوتھ سمٹ کا انعقاد اس بھی زیادہ پیمانے پر کیا جائے گا ۔ انہو ں نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت دور جدید میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کی اہمیت اور افادیت کو مد نظر رکھتے ہوئے صوبے میں اس کے فروغ اور نوجوان نسل کو اس تقاضوں سے اہم اہنگ کرنے کے لئے متعدد اقدامات شروع کر رکھے ہیں جن کے نتیجے میں یہ صوبہ عنقریب آئی ٹی کا ایک ہب بن جائے گا اور یہاں روزگار کے اتنے مواقع پیدا ہوں گے کہ ہمارے نوجوانوں کو روزگار کے حصول کے لئے کسی دوسری جگہ جانے کی ضرورت نہیں ہو گی ۔ صوبائی وزیر نے ڈیجیٹل یوتھ سمٹ 2017ء کے کامیاب انعقاد میں تعاون کرنے پر ورلڈ بینک ، یو اینڈ ڈی پی ، یو ایس ایڈ ، جاز کمپنی اور دیگر تمام اداروں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے یقین دلایا کہ ان کی حکومت صوبے میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کے فروغ کے لئے اقدامات کے تسلسل کو جاری رکھے گی ۔

Translate »
error: Content is protected !!