Chitral Times

22nd August 2017

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

مستوج خاص میں آتشزدگی ، رہائیشی مکانات اور جمع پونجی جل کر خاکستر ، بیس لاکھ روپے سے زیادہ کا نقصان

May 8, 2017 at 5:54 pm

مستوج ( نمائندہ چترال ٹائمز ) مستوج خاص کے مقام ڑاکھپ میں اچانک آگ لگنے کی وجہ سے رہائشی مکانات جل کرخاکستر ہوگئے ہیں۔ نقصانات کا اندازہ بیس لاکھ روپے سے زیادہ بتایا گیا ۔ تفصیلات کے مطابق ڑاکھپ کے رہائشی دینار ولی شاہ کے رہائشی مکانات میں اتوار کے دن اچانک آگ بھڑک اُٹھی جو دیکھتے ہی دیکھتے پورے مکانات کو آپنے لپیٹ میں لے لیا ۔ جس کے نتیجے میں 7کمروں پر مشتمل مکانات سمیت تمام جمع پونجی بھی جل کر خاکستر ہوگئے ہیں۔ تاہم چترال سکاوٹس، پولیس اور مقامی رضاکار موقع پر پہنچ کر آگ بجھانے میں مدد کی ۔اور تین گھنٹے میں آگ پر قابو پالیا گیا۔ جس کی بنا پر ملحقہ دیگر مکانات آتشزدگی سے بچ گئے ۔ نقصانات کا اندازہ 20لاکھ روپے سے زیادہ بتایا گیا۔ آگ لگنے کی وجہ فوری طور پر معلوم نہ ہوسکا ۔ تاہم مقامی پولیس تفتیش کررہی ہے۔ علاقے کے عوام نے بتایا کہ دینار ولی شاہ کا تعلق انتہائی غریب خاندان سے ہے ۔ انھوں نے تنکا تنکا جمع کرکے مذکورہ مکانات تعمیر کئے تھے۔ جبکہ آگ لگنے کی وجہ سے مکانات سمیت تمام جمع پونجی بھی جل کرخاکستر ہوگئے ہیں لہذا حکومت متاثرہ شخص کے ساتھ خصوصی مدد کرے۔ تاکہ وہ مکانات دوبارہ تعمیر کراسکے۔
یادرہے کہ ایک ماہ کے اندر مستوج میں آگ لگنے کا یہ دوسرا واقعہ ہے۔ دریں اثنا مستوج کے عوام نے ضلعی انتظامیہ اور صوبائی حکومت سے پرزور مطالبہ کیاہے کہ مستوج خاص کیلئے فائر برگیڈ کی کم از کم تین گاڑیاں فراہم کی جائے تاکہ اسی طرح کے ایمرجنسی حالات میں فوری طور پرآگ پر قابو پایا جاسکے۔ ویلج کونسل مستوج کے نائب ناظم عبد الرحمن نے مقامی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ بار بار قرار داد کے زریعے ضلعی و صوبائی حکومت کے نوٹس میں لایا جاتا ہے مگر تاحال علاقے کیلئے فائر فائٹر کی کوئی سہولت دستیا ب نہیں ۔انھوں نے حکام بالا سے ایک مرتبہ پھر مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ علاقے کیلئے فوری طور پر فائر فائیٹر گاڑیوں اور عملہ کی تعیناتی عمل میں لایا جائے۔ تاکہ کسی بھی ناگہائی صورت حال میں نقصانات کم سے کم ہو۔ انھوں نے صوبائی حکومت سے مستوج خاص میں 1122کے دفاتر فوری طور پر کھولنے کا بھی مطالبہ کیا۔

Translate »
error: Content is protected !!