Chitral Times

23rd August 2017

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

جاد فاونڈیشن اور بارسیلونا پرونشل کونسل کے اشتراک سے ڈیزاسٹر رسک گورننس پراجیکٹ کی افتتاحی تقریب

May 8, 2017 at 5:43 pm

چترال ( نمائندہ چترال ٹائمز ) چترال میں گزشتہ کئی سالوں سے قدرتی آفات کی تعداد میں بے تحاشا اضافے اور ان کے نتیجے میں انسانی نقصان کو کم سے کم کرنے کے لئے انسانی کوششوں کو مجتمع کرنے کے لئے ڈسٹرکٹ گورنمنٹ نے جاد فاونڈیشن اور بارسیلونا پرونشل کونسل کے اشتراک سے ڈیزاسٹر رسک گورننس پراجیکٹ شروع کردی ۔ اس سلسلے میں جمعرات کے روز افتتاحی ورکشاپ مقامی ہوٹل میں منعقدہوئی جس میں ضلع ناظم مغفرت شاہ کے علاوہ ضلعی حکومت اور انتظامیہ کے افسران، فاونڈیشن کے سینئر اہلکار اور سول سوسائٹی کے ارکان کثیر تعداد میں موجود تھے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ضلع ناظم چترال مغفرت شاہ نے اس بات پر زور دیا کہ نیچرل ڈیزاسٹرز کے میدان میں کام کرنے والے اداروں میں ایک مضبوط ربط اور ہم آہنگی لاکر ایک چھتری تلے لایا جائے تاکہ بعض کاموں کا مختلف اداروں کی اعادہ نہ ہو جس سے وسائل ضائع ہوں گے۔ انہوں نے کہاکہ آیندہ پانچ سال چترال کیلئے انتہائی اہمیت رکھتے ہیں کیونکہ اس عرصے میں چترال میں بڑے پیمانے پر بجلی کے منصوبے ، نیشنل ہائی وے کی شاہراہیں بننے کے بعد زندگی میں غیر معمولی تبدیلی کے امکانات ہیں اور سیاحت کو فروغ دینے اور دیگر قدرتی وسائل سے استفادہ کرنے کے مواقع سامنے آئیں گے ۔ ا انہوں نے کہا ۔ کہ ہم اگر خود ان مشکلات سے نکلنے کی کو شش نہیں کریں گے ۔ تو کوئی دوسرا ہماری مدد نہیں کرے گا ۔ ضلع ناظم نے کہا کہ چترال کی ترقی کیلئے پاکستان پاورٹی ایلیویشن فنڈ کے تحت بھی بہت بڑے پیمانے پر منصوبوں کا آغاز ہونے والا ہے جو کہ دس سالہ پروگرام ہے جس سے چترال کے بہت سے مسائل حل کئے جائیں گے ۔

اس موقع پرمہمان خصوصی اور ڈسٹرکٹ فنانس افیسر نورالامین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ پراجیکٹ کے ذریعے پہلے سے کام کرنے والے اداروں کو ایک پلیٹ فارم میں لانے میں مدد ملے گی ۔ جس سے بہتر نتائج نکلیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ضلع ناظم ایک وسیع وژن رکھتے ہیں ۔ اور اُنہوں نے اس حوالے سے جو کوشش کی ہے ۔ وہ داد و تحسین کی مستحق ہے ۔ پروگرام آفیسر فریدہ سلطانہ نے مہمانوں کو خوش آمدید کہا اور ورکشاپ کے مقاصد بیان کئے جبکہ پروگرام کو آرڈنیٹر شکیلہ نے پراجیکٹ کا تفصیلی خاکہ پیش کیا ۔ اور تمام امور پر تفصیل سے پریزنٹیشن دی ۔ جبکہ چیف ایگزیکٹیو سید حریر شاہ نے اس موقع پر شرکاء کی طرف سے اُ ٹھائے گئے سوالات کا جواب دیتے ہوئے کہا ۔ کہ یہ نیا پروگرام نہیں ہے ۔ بلکہ یہ اُن اداروں کی کارکردگی بہتر بنانے کے ساتھ ساتھ ایک بہتر سٹریٹجی کے تحت کام کرنے پر یقین رکھتی ہے ۔ جو پہلے سے ہی قدرتی آفات کے نقصانات کو کم سے کم کرنے کے سلسلے میں کام کرتے آئے ہیں ۔ ہمیں باہمی اشتراک سے کارکردگی بہتر بنانے اور ڈوپلیکیشن سے بچنے میں مدد ملے گی ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ اس پراجیکٹ کی ایک خاص خوبی یہ ہے ۔ کہ اسے ڈسٹرکٹ گورنمنٹ کی سپورٹ حاصل ہے ۔ اور ایک فعال مانٹیرنگ سسٹم کے تحت ڈیزاسٹر سے متعلق تمام اُمور اور منصوبوں کا جائزہ لیا جاتا رہے گا ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ پائلٹ پراجیکٹ آیندہ چار سالہ پروگرام کا نقطہ آغاز ہے ۔ جس کا انحصارموجودہ پراجیکٹ کی کارکردگی پر ہے ۔

Translate »
error: Content is protected !!